منگل, 25 اگست 2015 18:17

ایران اور تیل کے یورپی خریداروں کے مذاکرات شروع

ایران اور تیل کے یورپی خریداروں کے مذاکرات شروع

اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر پیٹرولیم بیژن نامدار زنگنہ نے کہا ہے کہ ایران اور تیل کے یورپی خریداروں کے درمیان مذاکرات شروع ہو گئے ہیں-

بیژن نامدار زنگنہ نے منگل کے روز تہران میں پریس کانفرنس میں کہا کہ پابندیوں کے خاتمے کے بعد ایران اپنی تیل کی پیداوار میں پانچ لاکھ بیرل تک ا‌ضافہ کرے گا- انہوں نے اس بات کا ذکر کرتے ہوئے کہ ایران کو پابندیوں کے بعد کے دور میں تیل کی فروخت کی منڈی کے بارے میں تشویش نہیں ہے، کہا کہ تیل کی فروخت کے بارے میں ابھی سے یورپ، ہندوستان، چین اور جنوبی کوریا کے خریداروں کے ساتھ مذاکرات شروع ہو گئے ہیں- ایرانی وزیر پیٹرولیم نے ایران کے خلاف غیرمنصفانہ پابندیاں لگائے جانے کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ پابندیوں کے دور میں ایران پر وسیع دباؤ ڈالا گیا لیکن ہم نے ان پابندیوں اور دباؤ سے نکلنے میں کامیابی حاصل کی- انہوں نے کہا کہ ہم عالمی تیل منڈی میں دس لاکھ بیرل تیل کے ایرانی حصے کی بحالی کے لئے کوشاں ہیں کیونکہ پیداوار میں ا‌ضافے کا مطلب اوپیک میں زیادہ طاقت کا حصول ہے- بیژن نامدار زنگنہ نے کہا کہ بعض علاقائی حکومتوں نے ایران کے خلاف تیل کی جنگ چھیڑ دی ہے جس کی ایک وجہ یمن، شام اور عراق کے بارے میں اختلاف ہے-

Add comment


Security code
Refresh