منگل, 25 اگست 2015 17:21

کانگریس کی ایٹمی معاہدے کی مخالفت امریکا کے نقصان میں

کانگریس کی ایٹمی معاہدے کی مخالفت امریکا کے نقصان میں

ایران کی تشخیص مصلحت نظام کونسل کے سربراہ آیت اللہ ہاشمی رفسنجانی نے کہا ہے کہ امریکی کانگریس کی طرف سے ایٹمی معاہدے کی مخالفت امریکا کے لیے نقصان دہ ثابت ہو گی-

ایران کے شمال مشرقی صوبے خراسان رضوی کے علما اور اعلی دینی درسگاہوں کے طلبہ نے منگل کو تشخیص مصلحت نظام کونسل کے سربراہ آیت اللہ ہاشمی رفسنجانی سے ملاقات کی- اس موقع پر آیت اللہ ہاشمی رفسنجانی نے کہا کہ امریکا خطے میں دہشت گردی کو بڑھنے سے روکنے میں اسلامی انقلاب کے کردار اور علمی طاقت سے آگاہ ہے- انہوں نے کہا کہ ایران کی ایٹمی مذاکراتی ٹیم کی مزاحمت کی وجہ سے امریکی صدر کو ایران کی طاقت و توانائی کا اعتراف کرتے ہوئے کہنا پڑا کہ ایران کے خلاف پابندیاں بے اثر ہیں اور دنیا کے ممالک اس سلسلے میں امریکا کا ساتھ نہیں دے رہے ہیں- آیت اللہ ہاشمی رفسنجانی نے چھے عالمی طاقتوں پر ایران کی ایٹمی مذاکراتی ٹیم کی سفارتی کامیابی کی طرف اشارہ کیا اور کہا کہ ایٹمی مذاکرات میں ایرانی ٹیم کی کامیاب کارکردگی کی وجہ سے ایرانی عوام نے اپنے حق تک رسائی حاصل کر لی- انہوں نے اس بات کا ذکر کرتے ہوئے کہ ایٹمی ٹیکنالوجی ایرانی سائنس دانوں کی حاصل کردہ ہے، کہا کہ رہبر انقلاب اسلامی فوجی ایٹمی سرگرمیوں کے حرام ہونے پر مبنی فتوی دے چکے ہیں اور یہ فتوی سب کے لئے حرف آخر ہے-

Add comment


Security code
Refresh