منگل, 25 اگست 2015 12:20

ایشیائی منڈیوں میں بہتری کے آثار

ایشیائی منڈیوں میں بہتری کے آثار

عالمی سطح پر کھربوں ڈالر خسارے کے بعد ایشیائی مارکیٹ میں کچھ بہتری کے آثار دکھائی دے رہے ہیں۔

چین کے شنگھائی اسٹاک میں مسلسل چوتھے روز کاروبار کا آغاز مندی کے ساتھ ہوا اور انڈیکس اچانک چھ اعشاریہ چار فیصد تک گرگیا،تاہم بعد میں صورتحال میں کچھ بہتری آئی اور انڈیکس میں ایک فیصد کا اضافہ ہوگیا۔ٹوکیو اسٹاک ایکس چینج میں بھی کاروبار شروع ہوتے ہی مندی کا رجحان تھا جس سے نکئی انڈیکس میں چار فی صد تک کمی واقع ہوئی ، تاہم بعد میں سرماریہ کاروں میں کچھ اعتماد بحال ہوا اور انڈیکس ایک اعشاریہ ایک فی صد اوپر چلا گیا۔ چین کے علاوہ دوسری بڑی مارکیٹوں ہانگ کانگ اور تائیوان اسٹاک میں بھی صورتحال میں بہتری آرہی ہے ۔چین کی معاشی پیداوار میں سست روی کے باعث شنگھائی اسٹاک ایکس چینج دوہزار سات کے بعد اب تک کی نچلی ترین سطح پر آگئی ہے، جس کے اثرات امریکا اور یورپی مارکیٹ پر بھی پڑے ہیں ۔ اقتصادی جریدے بلوم برگ کی رپورٹ کے مطابق عالمی مارکیٹ میں آنے والے بھونچال سے سرمایہ کاروں کے مجموعی طور پر دو اعشاریہ سات ٹریلین ڈالر ڈوب گئے ہیں۔

z25082015

Add comment


Security code
Refresh