ہفتہ, 08 نومبر 2014 17:20

لبنان کے معروف عیسائی مفکر جارج جرداق سے لبنانیوں کا وداع

لبنان کے معروف عیسائی مفکر جارج جرداق سے لبنانیوں کا وداع

لبنان کے عیسائی مفکر اور مصنف جارج جرداق کی یاد میں، دارالحکومت بیروت ميں اسلامی جمہوریۂ ایران کے حکام کی شرکت سے ایک دعائیہ تقریب کا انعقاد ہوا۔ لنبان مین اسلامی جمہوریۂ ایران کے سفیر کے نمائندے حسن صحت نے کل سہ پہر کو ، اس تقریب میں شرکت کی اور جارج جرداق کے اہل خانہ کو اسلامی جمہوریۂ ایران کے وزیر ثقافت و ارشاد اسلامی جناب علی جنتی کا پیغام پیش کیا۔ لبنان کے مصنف اور دانشور جارج سجعان جرداق نے ، کہ جو بدھ کو دارالحکومت بیروت میں  84 سال کی عمر میں وفات پاگئے، تقریبا تیس جلد کتابیں تحریر کی ہیں کہ جن میں سے اہم ترین کتاب " امام علی (ع) صدائے عدالت انسانی" ہے جسے عالمی سطح پر بہت زيادہ مقبولیت اور شہرت حاصل ہوئی ہے ۔ لبنان میں اسلامی جمہوریۂ  ایران کے سفارتخانے نے ایک بیان میں لبنان کے عظیم محقق، ادیب اور مفکر جارج جرداق کی وفات پر ملت لبنان کو تسلیت پیش کی ہے ۔ اس تقریب میں شریک مقررین نے اپنی تقریروں میں، لبنانی میڈیا اور ادب و ثقافت کے شعبے میں جارج جرداق کی شہرۂ آفاق علمی، ادبی اور ثقافتی شخصیت کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے ان کی کتاب "علی علیہ السلام صدائے عدالت انسانی" کو، یاد گار شاہکار سے تعبیر کیا۔ مقررین نے اسی طرح کہا کہ یہ عیسائی مورخ حضرت علی علیہ السلام سے بہت زیاد متاثر تھا اور اس نے علی صدائے عدالت انسانی اور روائع نہج البلاغہ تحریر کرنے کے ذریعے پیغمبر اسلام کے بعد، تاریخ کی اس عظیم شخصیت سے اپنے عشق کو جاوداں بنا دیا۔ لبنان کے رہنے والے اس عیسائی محقق نے چالیس سال امام علی علیہ السلام کے بارے میں تحقیقات انجام دینے کے بعد’’علی اورانسانی حقوق‘‘،’’علی اور عرب قوم پرستی‘‘، ’’علی،صدائے عدالت انسانی‘‘، ’’علی اور فرانس کا انقلاب‘‘، اور’’ علی اور سقراط‘‘ کے عناوین سے کتابیں لکھیں۔اور ان کتابوں کے ضمیمہ کے عنوان سے روائع نہج البلاغہ بھی تحریر کئے۔ جارج جرداق کی کتاب، علی صدائے عدالت انسانی، چار مرتبہ زیور طبع سے آراستہ ہوچکی ہے اور اس کا ترجمہ فارسی، اردو، فرانسیسی اور اسپینش زبانوں میں بھی ہوچکا ہے۔ دوسری جانب اسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکر ڈاکٹر علی لاریجانی نے لبنان کے شہرۂ آفاق عیسائي مصنف و ادیب جارج جرداق کے انتقال پر تعزیت پیش کی ہے۔ ڈاکٹر علی لاریجانی نے تعزیتی پیغام جاری کرکے کہا ہے کہ جارج سجعان جرداق ایک بزرگ ادیب اور مصنف تھے جنہوں نے اپنی عمر کی چار دہائياں امیرالمومنین حضرت علی علیہ السلام کی حیات طیبہ پر تحقیقات کرنے میں گذار دیں۔ انہوں نے کہا کہ جرداق کی گرانقدر کتابوں سے، حضرت علی  علیہ السلام سے ان کی محبت و عشق ظاہر ہوتا ہے۔جارج جرداق کو عالمی سطح پر عربی ادب میں بہت سے انعامات ملے ہیں۔قابل ذکر ہے  کہ جارج جرداق لبنان کے عظیم مصنف تھے اور ان کے ادب و طرز نگارش سے بڑے بڑے اساتذہ انگشت بدنداں رہ جاتے ہیں۔ قابل ذکر ہے کہ جارج جرداق لبنان کے عظیم مصنف تھے اور ان کے ادب و طرز نگارش سے بڑے بڑے اساتذہ انگشت بدندان رہ جاتے ہیں۔ جارج جرداق کو کل جمعے کو جنوبی لبنان میں ان کے آبائي گاؤں مرجعیون میں آرتھو ڈکس کلیسا میں سپرد خاک کردیا گيا۔  

Add comment


Security code
Refresh